Top Quality Science Fiction in Urdu?

Inchoate is finally published in Urdu

I am over-the-moon to announce that Inchoate, my science fiction story about a time-traveling paleontological investigator, is now available FREE and in Urdu. My deepest and sincerest thanks go out to Atiya Adil, a teacher, for undertaking this huge task and seeing it through to its conclusion. It is extremely satisfying to see this project come to fruition after such a long period of sustained effort.

I have long wanted to provide a free and representative sample of my work to people in Asia and the Middle East, of whom I seem to have many followers (I have more followers in Cairo than any other city and more followers in India than any country other than the UK and USA). I frequently see mountain-loads of downloads in these countries during my free promotions so I know the readers are there and I also know that getting online credit to buy books, let alone having the outlet to buy them, is not easy there. Now, these readers should be have both.

Below is just a short excerpt from the Urdu version.

انکوئیٹ:Inchoate

2008: مصنَف لز لو فعرن Lazlo Ferran   : ©کا پی رائٹ

تمام جملہ حقوق محفوظ ہہیں

ترجمعہ: عطیہ عادل

نمود سے پہلے

کسی نہ کسی کو تو یہ نقصان پورا کرنا ہی تھا- میرا قصور نہ ھوتے ھوۓ بھی ، لگتا یہی تھا کہ یہ خسا را مجھے ہی اٹھانا تھا- جلد ہی مقدمہ ختم ہو جاۓ گا اور سارے جہا ں کو اصلیت کا پتا چل جائے گا-

ادھر میں جیل کی تنگ کوٹھڑی میں پڑا منحوس قسم کے سر درد میں مبتلا ھو گیا تھا – ا س کی بڑی وجہ اس کوٹھڑی کا ٹوٹا ھوا بلب تھا جس کی جلتی بجھتی روشنی نے مجھے بیمار کر دیا تھا- نجانے یہ لوگ کب اس بلب کو ٹھیک کریں گے؟

بہت ساری سوچوں کے درمیاں مجھے وہ مضحکہ خیز صورت حال بھی یاد آگٰئ – مقدمے میں دفاع کا میرا پہلا دن تھا – سب کی توقعات کے برخلاف میں نے تقریباً سچ اگل دیا- جو بات میں نہیں کہ سکا وہ یہ تھی کہ واقعہ کے روز میں شدّید قسم کی بوریّت کا شکار تھا-

” جناب اس-قینو! آپ کی کمپنی کے اندراجات ظاہر کرتے ہیں کہ وقوعے کے روز یعنی چار اگست اور دو اشاریہ چار ارب سال پہلے (جب کرّہؑ  ارض کی نمود ہوئ ) آپ شمالی ٹیکسس میں بطورِ               خاص مشاہدات کے اندراج پر مامور تھے-“

اس بیان کے کچھ دیر پہلے میں اس بات سے انکار کر چکا تھا کہ میں وقوعے پر موجود تھا- بلکہ میں تو یہاں تک کہ چکا تھا کہ ایک دن پہلے بوجوہ ناسازئ طبیعت میں رخستی لے کر گھر چلا گیا تھا- سرکاری وکیل کو میری یہ با ت کچھ زیادہ پسند نہ آٰئ – اس نے ناگواری سے ایک نطر میری جانب ڈالی اور پھر معنی خیز انداز سے جیوری کی طرف دیکھنے لگا-

یہی وہ لمحہ تھا جب میں نے بوکھلا کر کہا: ” جی جی ! جناب معاف کیجۓ گا ! میرے خیال میں بس

ذہنی دباؤ کی وجہ سے میں سمجھ نہیں پایا اور وقوعے کے روز کو میں اس دن سے ملا بیٹھا جس دن میں جلدی گھر چلا گیا تھا- یہ سب جو اس دن ہوا ، وہ ایک نادانستہ بھول سمجھ لیجۓ جو شاید میں بوریّت کی وجہ کر بیٹھا تھا-“

اپنی بات کی اہمّیت بڑھانے کے لیے میں حاضرین کی طرف مڑ گیا-” میں کئ دنوں سے لگا تار اپنا فرضِ منصبی ایک ہی طرح سے انجام دے رہا تھا- بڑی تندہی کے ساتھ میں تما م مشاہدات درج کر رہا تھا- مقامی آبادی سے میں گھل مل تو جاتا تھا مگر ان سے بہت قریب ہونے کی کوشش نہ کرتا، کیونکہ میرا کام تو ان کے معاشرے اور تہذ یب پر ناقدانہ نگاہ رکھنا تھا- پھر یہ بھی تھا کہ میں کئ ہفتوں سے بھینسے کا گوشت مختلف صورت

Inchoate کا اردو ترجمہ آن لائن مفت پڑھیں

Atiya can be reached a this email address: atiyaadil@gmail.com

Inchoate (Including Urdu ) at Google Play: https://rebrand.ly/InchoateUrdu

Urdo version of Inchoate at Smashwords: https://rebrand.ly/InchoateUrduS

If you sign up for my FREE NEWSLETTER NOW, you will also get 3 other books FREE.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s